Community News

Pakistani Blood Donors Association (PAK Donors) has been serving humanity since 2011 for the noble cause of blood donation. On 22nd November 2019, 12th Blood Donation camp was held at Central Blood Bank, Jabriya under patronage of Embassy of Pakistan. The event was organized with an aim to extend support to the Central Blood Bank to cater the need of blood supply in Kuwait. The Pakistani community in Kuwait expressed their solidarity and gratitude with the Kuwaiti society by supporting the noble cause of blood donation while strengthening brotherly ties between both nations.

The event was witnessed by an overwhelming attendance of above 300 donors. People from different communities participated. While the presence of Pakistanis in majority symbolized their love for their second home.

Mr. Amer Hamid – Founder Pakistani Blood Donors Association especially came from Pakistan to attend the event & Mr. Naveed Shehzad, Mr. Faraz Mustaq Founder Members were also Present in the event.  Mr. Amer Hamid & Mr. Ehsanulhaq welcomed Chargé d'affaires, Embassy of Pakistan Mr. Ashar Shahzad who visited the blood bank and shared his words that such activities help to extend the positive image of Pakistani community in Kuwait. He congratulated PAK Donors on organizing a successful event.

A Special visit was paid by Dr. Reem Al Salem, Specialist Hematologist-Head of Al Razi Hospital laboratories, Mrs. Shaista Zahid, Head Coordinator women wing PAK Donors and Dr Shujaudeen Khokhar, President of Society of Pakistani Doctors in Kuwait escorted her around the various sections of camp. She appreciated the efforts of the organization in spreading awareness about the blood donation.

Mr. Ehsanulhaq, Co-Founder PAK Donors & Mr. Irfan Saeed, Chief Adviser Pak Donors warmly welcomed the dignitaries and worthy donors. Mr. Ehsan’s guidance has been a beacon for the entire team throughout the years. His devotion to this cause inspired many people to be a part of this team.

Hafiz Muhammad Shabbir, Peer Ajmad Hussian, Mr. Rana Ijaz Sohail, Hafiz Haeez ur Rehman, Mr. Majid Ali Chaudhary, Mr Abdullah Abbasi, Mian Arshad Mohamed, Dr. Jehanzeb Usman, Mr. Sheikh Bashir & Syed Babar Prince graced the occasion with their presence & their presence at this event proved their commitment and devotion in supporting the organization. They all appreciated the untiring efforts of team members and volunteers and extended their support in future events.

Mr. Arif Butt, Chairman PAK Donors & Mr. Nouman Aslam Ghuman, Head Coordinator PAK Donors & ALL TEAM (Mr. Adnan Javed, Mr. Altaf Hussian, Mr. Hassan Abid, Mr. Osama Imtiaz, Mr. Shahbaz Ahmed) aimed to continue their services for this humanitarian cause, He Extended his gratitude to the Embassy of Pakistan, Kuwait Central Blood Bank, Cause Partners (IEC) YW, Sponsors, Dignitaries, Donors, Volunteers, Media Partners and everyone who supported this cause. He thanked and appreciated all his team members for their hard work and effort.

The PAK Donors aspire to inspire other communities to spread awareness of blood donation in Kuwait.

Photo Album: https://www.facebook.com/pg/PakistanisInKuwait/photos/?tab=album&album_id=2571853639579602

 

 
 
 پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کے زیر اہتمام سیرت النبی صلی اللہ علیہ وسلم کانفرنس کا انعقاد کویت کے طول و عرض سے سینکڑوں خواتین کی شرکت کویت میں پاکستانی خواتین کا سب سے بڑا ، منظم اور عظیم الشان اسلامی تربیتی پروگرام پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کی زیر نگرانی تربیت حاصل کرنے والی طالبات نے بہترین انداز میں تلاوت، حمد و نعت، نقابت اور خطابت کے حوالے سے اپنی صلاحیتوں کا شاندار مظاہرہ کرکے حاضرین کے دل جیت لئے پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی صدر مسز روبیلہ غزل نے " سیرت طیبہ اور اصلاح احوال کے موضوع پر فکر انگیز خطاب کیا کانفرنس کی مہمان خصوصی مس حنا سلیم تهیں پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کے زیر اہتمام ایک عظیم الشان سیرت النبی صلی اللہ علیہ وسلم کانفرنس برائے خواتین کا انعقاد کیا مورخہ 9 نومبر بروز ھفتہ کو ایک مقامی هوٹل کے وسیع و عریض هال میں کیا گیا جس میں کویت کے طول و عرض سے کثیر تعداد میں خواتین نے شرکت کی کہ ھوٹل کا وسیع وعریض ھال اپنی تنگ دامانی کا منظر پیش کرنے لگا۔ یہ کویت میں بلا شبہ پاکستانی خواتین کا سب سے بڑا ، منظم اور عظیم الشان اسلامی تربیتی پروگرام تھا کانفرنس کی صدارت پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی صدر مسز روبیلہ غزل نے کی جبکہ مہمان خصوصی مس حنا سلیم تهیں. کانفرنس کا باقاعدہ آغاز تلاوت قرآن پاک سے ھوا جسکی سعادت فاطمہ نواز اور عائشہ عرفان نے حاصل کی. جبکہ کمپئرنگ کے فرائض زهرا حنیف اور فائزہ صدیقی نے انجام بحسن و خوبی دیئے. هدیہ نعت ثوبیہ عاصم، زھرہ حنیف، مسز راحت اقبال،سعدیہ خان،نادیہ خان،نائلہ مرزا اور عائشہ عرفان جبکہ کلام اقبال مریم منصور نے پیش کیا.اسلامی موضوعات پر انگلش میں بہترین تقاریر حفصہ ستار اور سعدیہ خان نے پیش کیں. ایسوسی ایشن کی جنرل سیکرٹری فائزہ صدیقی نے اقبال اور محبت رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے موضوع پر اظہار خیال کیا۔ حولی پاکستان انگلش سکول کی طالبات نے عربی میں خوبصورت نعت پیش کی پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کی زیر نگرانی تربیت حاصل کرنے والی طالبات نے بہترین انداز میں تلاوت ، حمد و نعت، نقابت اور خطابت کے حوالے سے اپنی صلاحیتوں کا شاندار مظاہرہ کرکے حاضرین کے دل جیت لئے. اس کانفرنس کی مہمان خصوصی مسز حنا سلیم نے کہا کہ مجھے اس عظیم الشان سیرت النبی صلی اللہ علیہ وسلم کانفرنس میں شرکت پر بہت خوشی هو رھی ھے انتہائی منظم اور پھر کثیر تعداد میں خواتین کی شرکت اور مزید یہ کہ پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی زیر نگرانی تربیت حاصل کرنے والی طالبات کا بہترین انداز میں تلاوت، حمد و نعت، نقابت اور خطابت پیش کرنا انتہائی شاندار اور قابل ستائش ھے. اور میں پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی کامیابی کے لئے دعا گو هوں اور انتہائی کامیاب اور منظم سیرت النبی کانفرنس کے انعقاد پر مبارکباد پیش کرتی ھوں۔ پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی صدر مسز روبیلہ غزل نے " سیرت طیبہ اور اصلاح احوال" کے موضوع پر فکر انگیز اور موثر خطاب کیا انہوں نے کہا کہ آج کی عورت بحیثیت ماں، بہن، بیٹی اور بیوی کے اپنی ذمہ داریوں کو احسن طریقے سے ادا نہیں کر رہی جسکی بنیادی وجہ اسلامی تعلیمات سے دوری ھے. عورت دنیاوی تعلیم کے ساتھ ساتھ اگر دینی تعلیم کی بھی حامل ھو تو وہ بہتر انداز میں اپنے بچوں کی تربیت کر سکتی ھے ایک پڑھی لکھی اور دیندار ماں آئندہ آنے والی نسلوں کی اسلامی خطوط پر بہترین تربیت کر سکتی ھے انہوں نے کہا کہ پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کا مقصد خواتین کی دینی تعلیم و تربیت اور فلاح و بہبود ھے تاکہ وہ معاشرے کی ترقی میں بهرپور کردار ادا کر سکیں. انہوں نے تمام شرکاء، میڈیا نمائندگان، پاکستان ویمن ایسوسی ایشن کویت کی تمام ٹیم بالخصوص کانفرنس کوآرڈینیٹر نائلہ مرزا کی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کیا، اور تمام مہمانوں کا کانفرنس میں شرکت کرنے پر شکریہ ادا کیا آخر میں درود و سلام اور دعا کی گئی اور تمام ٹیم اور طالبات میں تعریفی سرٹیفکیٹس تقسیم کیے گئے اور کانفرنس کے انعقاد میں نمایاں کردار ادا کرنے والی خواتین میں تعریفی شیلڈز پیش کی گئیں اور قرعہ اندازی کے ذریعے سامعین میں انعامات تقسیم کیے گئے اس طرح یہ یادگار کانفرنس اپنے اختتام کو
پہنچی.
 
 
 

 

Click for Photo Album https://www.facebook.com/pg/PakistanisInKuwait/photos/?tab=album&album_id=2541715009260132

Click to Watch the full event on youtube 

 

 

اس پرچم کے سائے تلے ہم ایک ہیں
پاکستان سے آنے والی سرکردہ حکومتی شخصیات چوہدری وسیم اور ندیم عباس بارا کے اعزاز میں یادگار تقریب
اوورسیز پاکستانیوں کے جائیدادوں کے مقدمات 6 ماہ میں نمٹائے جائینگے
وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کا خطاب
قسم کھا کر کہتا ہوں کہ پاکستان میں تبدیلی آئے گی اور آ کر رہے گی:حافظ محمد شبیر
عمران خان دنیا بھر میں گرین پاسپورٹ کی عزت کیلئے کام کر رہے ہیں: ملک ندیم عباس بارا
پاکستان بزنس سنٹر کویت کے زیر اہتمام کویت کے دورہ پر آنے والی سرکردہ حکومتی شخصیات چوہدری وسیم اختر وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب اور ملک ندیم عباس بارا کے اعزاز میں ایک یادگار تقریب کاانعقاد کیا گیا جس میں کمیونٹی کے ہر طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے شرکت کی، اسی مناسبت سے پروگرام کا نام ،،اس پرچم کے سائے تلے ہم ایک ہیں ،، رکھا گیا۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری وسیم اختر نے کہا کہ وہ پاکستان بزنس سنٹر کے ڈائریکٹر جنرل حافظ محمد شبیر کے شکر گذار ہیں جنہوں نے انہیں کویت آنے اور پاکستانی کمیونٹی سے رابطے کا موقعہ فراہم کیا۔
آپ کو اپنے کیسز ڈیل کرنے کیلئے وطن نہیں جانا پڑے گا ،ہم آپ کے نمائندے کے طور پر آپ کے مقدمات لریں گے۔آپ کویت میں پاکستانی مصنوعات کو فروغ دینے کیلئے دن رات کام کر رہے ہیں۔کمیونٹی مسائل پر عزت مآب سفیر پاکستان سے بات ہوئی ہے،جیلوں میں بند پاکستانیوں کے بارے میں بھی رپورٹ حاصل کر لی ہے،جرائم کے حوالہ سے دیگر کمیونٹیز کے مقابلہ میں پاکستانیوں کا تناسب بہت کم ہے،سب سے بڑا مسئلہ کویت پاکستان روٹ پر پی أئی اے پروازوں کی بحالی کا ہے ،وہ اس مسئلہ کو ہر فورم پر اتھائیں گے ،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور وزیراعظم عمران خان سے بھی اس بارے میں بات کریں گے ،کوشش کریں گے کہ جلد از جلد یہ مسئلہ حل ہو جائے۔
قبل ازیں تقریب کا آغاز تلاوت قرآن مجید سے ہوا جس کی سعادت حافظ عامر شبیر نے حاصل کی،کمپئرنگ کے فرائض محمد افضل شافی نے انتہائی خوبصورتی سے انجام دئیے،مقررین کو اسٹیج پر بلوانے سے پہلے وہ اشعار کا انتخاب اتنی مہارت سے کرتے ہیں کہ محسوس ہوتا ہے کہ وہ اشعار ان کے لئے ہی کہے گئے ہیں،انہوں نے ھدیہ عقیدت پیش کرنے کیلئے ووپ میڈیا کے سی ای او طارق اقبال کو اسٹیج پر آنے کی دعوت دی،ہر دل میں ہے نام محمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم پیش کر کے سماں باندھ دیا۔کویت اور پاکستان کے قومی ترانے ہیش کئے گئے جن کے احترام میں تمام شرکاء خاموش اور باادب کھڑے ہو گئے۔
کویت میں انصاف ویلفیئر سوسائٹی کے بانی صدر ارشد نعیم چوہدری تقریب کے پہلے مقرر تھے،انہوں نے کہا کہ وہ چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس بارا کو کویت میں خوش آمدید کہتے ہیں، انہوں نے 2006 میں کویت میں آم کا پودا لگایا تھا جو اب ایک تناور درخت بن چکا ہے،اللہ تعالیٰ کا کرم ہے کہ ہم کویت میں رہ کر پاکستان کی خدمت کر رہے ہیں۔یو کے انٹر نیشنل کے سی ای او محمد جمیل نے خطاب کرتے ہوئے تقریب کے میزبان اور ڈائریکٹر جنرل پاکستان بزنس سنٹر حافظ محمد شبیر کو زبردست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ کویت میں پاکستانی مصنوعات کے فروغ کے لیے دن رات کام کر رہے ہیں،کمیونٹی کی ممتاز کاروباری وسماجی شخصیت شمشاد احمد خان تنولی،سینئر رہنما انصاف ویلفیئر سوسائٹی کویت نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے مستقبل کے لیڈر حافظ محمد شبیر کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں جنہوں نے مختصر وقت میں اتنا شاندار پروگرام ترتیب دیا ،وہ چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس کو کویت میں خوش آمدید کہتے ہیں، حافظ محمد شبیر کمیونٹی کی خدمت کیلئے دن رات محنت کر رہے ہیں، انہوں نے پی آئی اے پروازوں کی بحالی کیلئے ہماری آواز پارلمینٹ ہاؤس اور حکام بالا تک پہنچائی ،انہیں امید ہے کہ وہ پی آئی اے کی پروازیں بحال کرانے میں کامیاب ہو جائیں گے۔ماجد علی چوہدری ممبر بورڈ آف گورنرز اوپی ایف نے خطاب کرتے ہوئے چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس بارا کا شکریہ ادا کہ وہ کویت میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کے مسائل سے آگہی کیلئے تشریف لائے۔وسیم اختر کے پاس بڑے ایماندار لوگوں کی ٹیم موجود ہے جن میں ڈی آئی جی ناصر مختار بھی شامل ہیں جنہوں نے ایف ایس سی تک تعلیم کویت سے حاصل کی ،انہوں نے یقین دہائی کرائی ہے کہ اب اوورسیز پاکستانیز کے مقدمات کا فیصلہ 6 ماہ میں ہو گا۔وسیم چوہدری اور انہوں نے لاہور میں ایک پی کالج سے تعلیم حاصل کی، وہ ان سے ایک سال سینئر تھے،حافظ محمد شبیر صاحب کو وہ پچھلے بیس سال سے جانتے ہیں ،وہ کویت میں کمیونٹی کی خدمت اور پاکستانی مصنوعات کے فروغ کیلئے دن رات کام کر رہے ہیں۔ محمد عارف بٹ صدر پاکستان بزنس کونسل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ معزز مہمانان چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس بارا کو کویت میں خوش آمدید کہتے ہیں،آج سفارت خانہ میں معزز مہمانان کی عزت مآب سفیر پاکستان غلام دستگیر سے ملاقات ہوئی،اس موقعہ پر انہیں کمیونٹی مسائل سے آگاہ کیا گیا ،انہوں نے ان مسائل کے حل کی یقین دیانی کرائی۔ کویت میں مقیم پاکستانی کمیونٹی ایک عظیم کمیونٹی ہے ،ہم اس پرچم کے سائے تلے ایک ہیں۔
پاکستان سے آنے والے معزز مہمان ملک ندیم عباس بارا رکن پنجاب اسمبلی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ ان کی خوش قسمتی ہے کہ وہ کویت میں رہنے والے بھائیوں اور بزرگوں کے درمیان ہیں،آپ لوگ محنت مزدوری کر کے پیسے پاکستان بھیجتے ہیں ،کچھ لوگ چالیس پچاس سال سے کویت میں محنت کر رہے ہیں مگر افسوس گذشتہ حکومتوں انہیں سہولتیں فراہم نہیں کیں مگر وزیراعظم عمران خان نے ہمیشہ اوورسیز پاکستانیوں کیلئے بات کی،انہوں نے پاکستانی تارکین وطن کیلئے الگ ادارہ بنایا،بیرونی ممالک کی جیلوں سے قیدی چھڑوانے۔وہ دنیا بھر میں مقیم پاکستانیوں کی عزت بحال کرانے کیلئے کام کر رہے ہیں،وہ وقت دور نہیں جب دنیا بھر میں گرین پاسپورٹ کی عزت ہوگی ،وہ حافظ محمد شبیر کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے کویت مدعو کیا اور پاکستانی کمیونٹی سے ملاقات کا موقعہ فراہم کیا ۔
تقریب کے میزبان حافظ محمد شبیر نے اپنے اختتامی کلمات میں کہا کہ وہ معزز مہمانان چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس بارا کا شکریہ ادا کرتے ہیں جو ان کی دعوت پر کویت تشریف لائے اور کمیونٹی کے مسائل سنے، انہیں یاد ہے انہوں نے اسی ہال میں قسم کھائی تھی کہ عمران خان وہ لیڈر ہے جسے خریدا نہیں جاسکتا،وہ آج پھر قسم کھا کر کہتے ہیں کہ تبدیلی آئے گی اور آ کر رہے گی، ہم سب نے مل کر تبدیلی لانی ہے ،انہوں نے علامہ اقبال کا مشہور شعر پڑھا
تندی باد مخالف سے نہ گھبرا اے عقاب
یہ تو چلتی ہے تجھے اونچا اڑانے کیلئے
انہوں نے وعدہ کیا تھا کہ حکومتی شخصیات کو ان کے سامنے لائیں گے،آج چوہدری وسیم اختر وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کو کمیونٹی کے سامنے پیش کرکے یہ وعدہ پورا کردیا ہے ،وہ چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے کویت میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کے مسائل بڑے غور سے سنے اور ان کے حل کی یقین دہائی کرائی ،وہ خود بھی ان سے رابطے میں رہیں گے ،انشاء اللہ ان مسائل کو حل کرا کے رہیں گے۔ آخر میں ملک ندیم عباس اور چوہدری وسیم اختر کو یادگاری
شیلڈز پیش کی گئیں۔ حافظ محمد شبیر کی دعا کے ساتھ یہ تقریب اختتام کو پہنچی ،شرکاء کیلئے پرتکلف عشائیہ کا بھی اہتمام کیا گیا تھا۔
 
 
 

 

پاکستان بزنس سنٹر کویت کے زیر اہتمام پانچویں گرینڈ مینگو فیسٹول کی افتتاحی تقریب سفارت خانہ پاکستان کی زیر سرپرستی اور زھراء جمیعہ کے تعاون سے اتوار 30 جون کی شب زھراء جمیعہ میں منعقد ہوئی جس میں عزت مآب سفیر پاکستان غلام دستگیر نے سفارت خانہ پاکستان کے حکام ،پاکستان بزنس سنٹر کویت کے ڈائریکٹر جنرل حافظ محمد شبیر،دوست ممالک کے سفیروں ،سفارتکاروں ،اعلی کویتی شخصیات ،پاکستان سے خصوصی دعوت پر کویت تشریف لانے والی معزز شخصیات  چوہدری وسیم اختر وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب،ملک ندیم عباس بارا کے ساتھ پانچویں گرینڈ مینگو فیسٹول کا باقاعدہ افتتاح کیا۔دوست ممالک کے جن سفیروں اور سفارت کاروں نے تقریب میں شرکت کی ان کی تفصیل درج ذیل ہے گربا گجم عزت مآب سفیر نائجیریا، یو پیانشل عزت مآب سفیر جنوبی کوریا ،ڈاکٹر عمر تاتائی عزت مآب سفیر سوڈان ، عبدالعزیز ڈپٹی ہیڈ آف مشن کرغستان،پوشیتا پریرا ڈپٹی ہیڈ آف مشن سری لنکا ،،راحت سفارتخانہ شام، طارق البفتی سفارتخانہ اردن، مادام ماجدہ خالد الظہر پروٹوکول افسر دفتر خارجہ کویت، مادام نرجس الشبتی کویتی ہیڈ آف ڈی ڈبلیو سی، ریاض المطوع وزارت اطلاعات اینڈ براڈکاسٹنگ کارپوریشن ،علی العلی وزارت خارجہ امور اور دیگر شامل تھے،پاکستان بزنس سنٹر کے ڈائریکٹر جنرل حافظ محمد شبیر نے پاکستان بزنس سنٹر کے سینئر منیجر راجہ ظفر اقبال اور اپنی ٹیم کے دیگر ارکان کے ہمراہ تمام معزز مہمانان کا والہانہ استقبال کیا ،20 سے زائد،کویتی ،عرب اور لوکل میڈیا نے اس ایونٹ کو کور کیا ،حافظ محمد شبیر نے تمام معزز شخصیات کو باری باری اسٹیج پر بلایا اور انہیں پاکستانی آم تحفہ کے طور پر پیش کئے ،اس موقعہ پر اظہار خیال کرتے ہوئے عزت مآب سفیر پاکستان غلام دستگیر نے کہا کہ انہیں کویت میں پاکستانی مینگو فیسٹول کا افتتاح کر کے بڑی خوشی محسوس ہو رہی ہے ، وہ حافظ محمد شبیر کو ایونٹ کی کامیابی پر مبارکباد پیش کرتے ہیں،ان کی کاوشوں سے کویت میں ہر طرف پاکستانی آم کے چرچے ہیں۔سفارت خانہ پاکستان کے ڈپٹی چیف آف مشن اشعر شہزاد نے کہا کہ وہ کامیاب مینگو فیسٹول کے انعقاد پر حافظ محمد شبیر اور ان کی ٹیم کو مبارکباد پیش کرتے ہیں ،پاکستان سے تشریف لانے والے ملک ندیم عباس بارا نے کہا کہ انہیں کویت میں پاکستانی آم کی اتنی شاندار پذیرائی دیکھ کر بڑی خوشی ہو رہی ہے ،انہوں نے کہا کہ پاکستانی آم کو اللہ تعالی نے خاص ذائقہ اور خوشبو عطاء کی ہے ، اللہ تعالیٰ نے ہماری زمین کو یہ خاصیت عطا کی ہے ،اگر پاکستانی آم کے بیج کو دنیا کے کسی بھی حصہ میں لے جا کر کاشت کریں تو اس میں یہ خوشبو اور ذائقہ موجود نہیں ہوگا۔چوہدری وسیم اختر وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ وہ حافظ محمد شبیر کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے انہیں کویت آنے اور یہاں پر مقیم ہم وطنوں سے ملاقات کا موقعہ فراہم کیا۔ انہوں نے کہا کہ حافظ محمد شبیر کویت میں میڈ ان پاکستان اشیاء اور آم کے فروغ کیلئے بہت کام کر رہے ہیں جس سے پاک تجارت کو بھی فروغ مل رہا ہے ،وہ ایک سچے اور محب وطن پاکستانی ہیں جو پاکستانی برآمدات میں اضافہ کیلئے کام کر رہے ہیں ، آخر میں تقریب کے میزبان حافظ محمد شبیر ڈائریکٹر جنرل پاکستان بزنس سنٹر نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ یہ اللہ تعالیٰ کا کرم ہےکہ پانچویں گرینڈ مینگو فیسٹول نے کامیابی کے تمام سابقہ ریکارڈ توڑ دئیے ،جس کیلئے وہ سفارتخانہ پاکستان کا خاص طور پر شکریہ ادا کرتے ہیں جن کی زیر سرپرستی پاکستانی مینگو فیسٹول کا انعقاد ممکن ہوا،وہںزھراء جمیعہ کی انتظامیہ کا بھی شکریہ ادا کرتے ہیں جن کے تعاون کے بغیر اتنی یادگار تقریب کا انعقاد ممکن نہ تھا، وہ راجہ ظفر اقبال سینئر مینیجر پاکستان بزنس سنٹر اور ان کی ٹیم کو بھی خراج تحسین پیش کرتے ہیں جنہوں نے اس ایونٹ کی کامیابی کیلئے دن رات محنت کی،وہ دوست ممالک کے سفیروں ،سفارتکاروں ،اعلی کویتی شخصیات کا بھی شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے اپنا قیمتی وقت نکال کر تقریب کو رونق بخشی۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ پاکستان سے تشریف لانے والی معزز شخصیات چوہدری وسیم اختر وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب آور ملک ندیم عباس بارا کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتے ہیں جو ان کی دعوت پر کویت تشریف لانے اور پاکستانی مینگو فیسٹول میں شرکت کی ،انہوں نے کہا کہ کویت میں میڈ ان پاکستان مصنوعات ،پاکستانی آم کا فروغ ان کی زندگی کا مشن ہے ،آج پاکستانی آم کویت کی  تقریباًہر مارکیٹ ، ہائپر اور جمیعہ میں دستیاب ہیں ،پاکستانی مصنوعات میں یہ خصوصیت ہے کہ وہ کویت کی مارکیٹ میں جگہ بنا سکتی ہے ۔حافظ محمد شبیر نے تمام مہمانان کو مسکراتے چہروں اور اس عزم کے ساتھ رخصت کیا کہ پاکستان کا نام روشن کرنے کیلئے ہم ایک ہیں اور مل کر کام کرتے رہیں گے۔

 

Image may contain: 6 people, people smiling, indoor

پنجاب کے علاقوں ملتان،مظفر گڑھ اور رحیم یارخان جبکہ سندھ کے علاقوں حیدرآباد، سندھڑی اور تھٹہ میں آموں کی بہترین اقسام پائی جاتی ہیں،جن میں چونسا ، لنگڑا ،سندھڑی ،بادامی اور انور راٹھور خاص طور قابل ذکر ہیں مگر چونسا کا کوئی جواب نہیں، منفرد ذائقے اور خوشبو کے باعث پاکستانی ام کو اپنی خوراک کا لازمی جزو بنائیں۔پاکستان سے تشریف لانے والے چوہدری وسیم اختر وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ حافظ محمد شبیر کے شکر گذار ہیں جنہوں نے انہیں کویت آنے اور پاکستانی مینگو فیسٹول میں شرکت اور پاکستانی کمیونٹی سے بات چیت کا موقعہ دیا ،انہیں کویتی بھائیوں سے بات چیت کر کے بڑی خوشی محسوس ہوئی ،ہماری مذہبی اور ثقافتی روایات ایک جیسی ہیں ،مینگو فیسٹول میں شرکت کر کے بڑی خوشی محسوس ہوئی ،یہ قابلِ فخر بات ہے کہ پاکستانی آم کویت اور دیگر خلیجی ممالک میں فروغ پا رہا ہے ،تقریب کے میزبان حافظ محمد شبیر ڈائریکٹر جنرل پاکستان بزنس سنٹر کویت حافظ محمد شبیر نے خطاب کرتے ہوئے تقریب میں شرکت کرنے والی صباح فیملی کی ممتاز شخصیات،پاکستان سے تشریف لانے والی حکومتی شخصیات واجد حسین بخاری ،ملک ندیم عباس بارا ایم پی اے،چوہدری وسیم اختر کو خوش امدید کہا کہ وہ ان کی دعوت پر کویت تشریف لائے،انہوں نےکہا کہ پاکستانی آم تمام پھلوں کا بادشاہ ہے،پاکستان میں آم کی 130 اقسام پائی جاتی ہیں جن میں چونسا ذائقہ اور ث کے لحاظ سے سرفہرست پے،انہوں نے تمام شرکاء کو دعوت دی کہ وہ یہاں اپنی نشستوں پر بیٹھ کر پاکستانی آم کے ذائقوں سے لطف اندوز ہوں۔کویت میں پہلے مینگو فیسٹول کی جو 2015 میں ایونیو میں منعقد ہوا تھا،تصویری جھلکیاں پیش کی گئیں۔کویت میں حکمران صباح فیملی کی ممتاز رکن مادام شیخہ سو ہیلہ الصباح نے خطاب کرتے ہوئے پاکستانی ام کی بہت تعریف کی اور اسے دنیا کا سب سےبہتر آم قرار دیا،انہیں پاکستانی ام بہت پسند ہیں، انہوں نےتقریب میں شرکت کی دعوت دینے پر حافظ محمد شبیر اور پاکستان بزنس سنٹر کا شکریہ ادا کیا۔ پاکستان کے سابق وفاقی وزیر سید واجد بخاری (والد زلفی بخاری) کو دعوت خطاب دی گئی، انہوں نے مینگو فیسٹول میں شرکت کی دعوت دینے ہر حافظ محمد شبیر کا شکریہ ادا کیا ،آپ کویت میں پاکستانی آم کے فروغ کیلئے کام کر رہے ہیں ،مجھے آپ پر فخر ہے،یہ کسی ایک فرد یا سیاسی جماعت کا مسئلہ نہیں،پورے پاکستان کا مسئلہ ہے،انہوں نے کہا کہ جو کوئی بھی پاکستان میں بزنس کرنا چاہے وہ اسے خوش امدید کہیں گے،ہم آپ کے ساتھ ہیں اور آپ کے حقوق کے تحفظ کیلئے کام کر رہے ہیں۔ اس دوران شرکاء کو ان کی نشستوں پر پاکستانی ام پیش کئے گئے جن کے ذائقوں سے لطف اندوز ہونے کے بعد ہر کسی نے اسے دنیا کا بہترین اور خوش ذائقہ پھل قرار دیا۔آخر میں شرکاء کو پرتکلف عشائیہ کی بھی دعوت دی گئی۔

Image may contain: 4 people, indoor

Image may contain: 9 people, people smiling, people standing, wedding, shoes and outdoor

پاکستان بزنس سنٹر کویت کے زیر اہتمام چوہدری وسیم اور ملک ندیم بارا کے اعزاز میں ظہرانہ کمیونٹی مسائل کے حل کیلئے سنجیدہ کوششوں کی یقین دہانی پاکستان بزنس سنٹر کویت کی دعوت پر کویت میں تشریف لانے والی ممتاز شخصیات چوہدری وسیم اختر وائس چیئرمین اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب اور ملک ندیم عباس بارا کے اعزاز میں مطعم شمام المبارکیہ میں ایک پرتکلف ظہرانہ کا اہتمام کیا گیا ،ظہرانہ کا اہتمام پاکستان بزنس سنٹر کویت کے ڈائریکٹر جنرل حافظ محمد شبیر کی طرف سے کیا گیا تھا جس میں کویت میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کی ممتاز کاروباری وسماجی شخصیات نے شرکت کی۔چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس بارا شرکاء میں گھل مل گئے ،انہیں کویت میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کے مسائل کے بارے میں تفصیل سے آگاہ کیا گیا جن میں کویت پاکستان روٹ پر پی آئی اے پروازوں کی بحالی کا مسئلہ سر فہرست تھا،چوہدری وسیم اختر اور ملک ندیم عباس بارا نے یقین دہائی کرائی کہ وہ ان مسائل سے متعلقہ حکام کو آگاہ کریں گے اور ان کے حل کیلئے بھرپور کوششیں کریں گے ،انہوں نے پاکستان بزنس سنٹر کویت کے ڈائریکٹر جنرل حافظ محمد شبیر کا خصوصی طور پر شکریہ ادا کیا جنہوں نے انہیں کویت آنے کی دعوت دی اور ان کے اعزاز میں پر تکلف ظہرانہ کا اہتمام کیا۔
 
Pakistan Business Center Hosted Lunch in honor of Guest from Pakistan to attend the Pakistani Mangoes Festival tomorrow on 30-Jun-2019 1. Mr. Malik Nadeem Abbas Bara- Member Punjab Assembly 2. Syed Wajid Hussain Bukhari - Ex Federal Minister of Pakistan 3. Ch. Waseem Akhtar Vice Chairman Overseas Pakistani Commission (OPC) Punjab
 
 
 
4.png

login with social account

Images of Kids

Events Gallery

PIK Directory

 

Online Health Insurance System

 Sate of Kuwait

Go to top